عجیب و غریب دوست

دنیا میں ہم سب منفرد ہیں کہی کوئی کسی چیز میں ماہر ہے اور کوئی کسی چیز میں- مگر رشتے ہمیشہ ایک سے ہی ہوتے ہیں جن کے مطلب اور روایے کبھی نہیں بدل سکتے تا وقت کہ انسان ان رشتوں میں کسی مادے کی آمیزش کردے یا انسانی نفس کی یا آنا کی شدت کو اس کدر بڑھا دے کہ رشتوں کا وجود ان کی اصل اساس کھو دیں- انسانوں میں بہت سارے رشتے مجود ہیں اور ان سب پر لکھنا میرے لیے ذرا مشقل ہے مگر کچھ الفاظوں سے میں آج دوستی کے رشتے پر بات کرنا چاہتا ھوں جو نہ صرف ایک خوبصورت رشتہ بھی ہے اور دوسری طرف ایک دشمن کا لباس بھی-

میرے تجربات کچھ عام سے ہیں اور کچھ خاص بھی جو کم سے کم میرے لیے خاص ضرور ہیں- آج بہت کچھ لکھنا چاہتا تھا اور آپ سب سے اپنے خیالات دوستی کے رشتے کے بارے میں کرنا چاہتا تھا (جبکہ مجھے معلوم ہے میرا لکھا ہوا کوئی نہیں پڑھتا اور نہ پڑھنا چاہتا ہے) مگر کچھ خاص دوست انسان کی زندگی میں ہمیشہ کی طرح کسی کو اپنی یادیں دے کر چلے جاتے ہیں اور دوستی کے ذکر پر اس خاص دوست کے ساتھ گزارے ھوے لمحے چاہے تھوڑی سی دیر کے لیے ھوں بہت یاد اتے ہیں- میں اسے دوستوں کو بلکل پسند نہیں کرتا جو اس کدر کسی دوست کو تقلیف دیں اور کوئی احساس بھی نہ ہو- یہ یادوں دوستی اسی طرح چلتی رہے تو ایک دن ایسا بھی اتا ہے جب یہ دوستی نہیں رہتی کسی اور مدار کا سفر اختیار کر لیتی ہے- اور اگر دوست ظالم ہو تو یہ سفر ختم ہو جاتا ہے یا ایک لمبی مسافت کا سفر بن جاتا ہے جس کا اختیام اس کے وجود کے ساتھ ہوتا ہے-

مگر میں آپ سے اپنے دوست کے خلاف احتجاج قلم بند کرنا چاہتا ھوں جو مجھ سے کبھی نہیں ملنا چاہتا اور میں اس کے لیے بلا شبہ ایک برا انسان ھوں- میں ایسا نہیں چاہتا مگر دوست کا حکم سر آنکھوں پر- الله خوش رکھے، آباد رکھے، اس سے رب کی خوبصورتی کا باغ سب کے لیے مثال اور خوشیوں کا سبب رہے- میرے دوست سے میرے رب کی کرنیں مہکتی رہیں اور خلقت اس کے مہک کی آرزوں مند رہے- امین!

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s