ناقبلے معافی گناہ

میں بچپن سے منفرد سوچ کا حامل رہا ہوں- جس کی وجہ سے لوگوں میں میرے بارے میں کچھ غیر معمولی راۓ پائی جاتی ہے- اور جب میری شادی کا وقت آیا تو غیر معمولی الزامات کا سامنہ کرنا پڑھا- یھاں تک کہ دیشتگرد کا الزام بھی لگ گیا- جس کی وجہ سے دو سالوں کے بعد میں آج کچھ اپنے رازوں سے پردہ اٹھا دینا چاہتا ہوں- اور اگر میں یہ کہوں تو غلط ہوگا کہ میں آج عیتراف جرم کرنے والا ہوں- بیشتر یہ کہ میں عیترافی بیان کی طرف جاؤں میں آپ سے کچھ ایسے اسباب پیش کرنا چاہتا ہوں جس کی وجہ سے میرا جھکاؤ غیر ارادی طور پر ان عوامل کی طرف تھا- وہ اسباب مدرجہہ ذیل ہیں،

١. والدین کی پرورش

٢. خدا سے محبت کی تعلیم

٣. خدا کے رسول سے محبت کی تعلیم

٤. بزرگوں کی پاکستان کے وجود کے لیے قربانیں

٥. پاکستان کا مطلب کیا لاالہٰ اللہ

یہ وہ اسباب تھے جس کی وجہ سے میں بچپن میں پاکستان کی محبت کا شکار ہو گیا اور وقت کے ساتھ ساتھ اس محبت کی شکل جنوں میں بدل گئی- جس کی وجہ سے میں نیشنل تاریخی دن بڑے جوش سے منانے لگا- کسی کو پاکستان سے محبت ہو اور رب سے نہ ہو، یہ تو ہو نہیں سکتا- جس کی وجہ سے میں علموں کے پاس تعلیم اور تربیت کے لیے جانے لگا، جس کی وجہ سے میرا جنوں پاکستان تبدیل ہو کر عشق پاکستان ہو گیا- جس کی وجہ سے میں ان الفاظوں کا استمال عام کرتا ہوں-

پاکستان میرا عشق، میرا جنوں

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s